Announcement

Collapse
No announcement yet.

وہ خود کو کہتے ہیں خدا

Collapse
X
 
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

    وہ خود کو کہتے ہیں خدا

    کیا پوچھتے ہو کہ شبِ ہجراں کیسے گزری
    وہ اکِ رات اب تک جو بس رات میں گزری

    انکا اشارہ درکار تھا بس ہمیں جینےمرنےکو
    وہ اک رات نہ انکار میں نہ اثبات میں گزری

    وہ بچپن کی چھپن چھپائی پرقائم ہیں اب تک
    وہ اک رات بھی خود سےسوالات میں گزری

    خشک سالی کھلیان توکیا چشم اجاڑ دیتی ہے
    وہ اک رات اشکوں بھری برسات میں گزری

    وہ خود کو ہم عشقِ کو کہتے رہے تھے'خدا
    وہ اک رات کیا بتائیں کہ تفرّقات میں گزری

    لباسِ شفاف پہنےشخص کوقاتِل کہوں کیسے؟
    وہ اک رات ایسے شک و شبہات میں گزری

    رسواہ زندگی نے ہر قدم ملزم ٹھہرایا ہم کو
    وہ اک رات جیسے کسی حوالات میں گزری

    اک سوال کہ'ہم کو تنہا کرکےکیا حاصل''شاہ جی''
    وہ اک رات ان کےلاکھوں جوابات میں گزری
    ​SHAH G'

    #2
    Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

    اک سوال کہ'ہم کو تنہا کرکےکیا حاصل''شاہ جی''
    وہ اک رات ان کےلاکھوں جوابات میں گزری

    oh teri khair! Shah ji ye to court kachahri wala mamla lagta hai.

    PS: poetry
    We should care for each other more than we care for ideas, or else we will end up killing each other.

    Comment


      #3
      Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

      Bohat Umdah............
      Kuch Aisay Haadsay Bhi Zindagi Mein Hoty Hain ~~~[email protected]~~~
      K Insan Bach To Jata Hai Magr Zinda Nahi Rehta.

      Comment


        #4
        Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

        dost...apney mulk ki court kaceriyoon say dushmn ko bhe bachiey..
        ​SHAH G'

        Comment


          #5
          Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

          thnx my freind..aap sab dostoon ki muhbat say tuslee milti hey.
          ​SHAH G'

          Comment


            #6
            Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

            shukar hai aisi bhari raat akhir guzar hi gye
            “When our absence does not change someone’s life..,

            then accept the reality that our presence has no meaning in their life…!

            Comment


              #7
              Re: وہ خود کو کہتے ہیں خدا

              khaan guzri hey dost....
              کیا پوچھتے ہو کہ شبِ ہجراں کیسے گزری

              وہ اکِ رات اب تک جو بس رات میں گزری
              ​SHAH G'

              Comment

              Working...
              X