Announcement

Collapse
No announcement yet.

Poetry

Collapse
X
 
  • Filter
  • Time
  • Show
Clear All
new posts

    Poetry


    وہ سلسلے وہ شوق وہ نسبت نہیں رہی ،
    اب زندگی میں ہجر کی وحشت نہیں رہی ،

    ٹوٹا ہے جب سے اسکی مسیحائی کا طلسم ،
    دل کو کسی مسیحا کی حاجت نہیں رہی

    پھر یوں ہوا کے کوئی شناسا نہیں رہا
    ، پھر یوں ہوا کے درد میں شدت نہیں رہی

    ، پھر یوں ہوا کے ہو گیا مصروف وہ بہت
    ، اور ہم کو یاد کرنے کی فرصت نہیں رہی

    ، اب کیا کسی کو چاہیں کے ہم کو تو ان دنوں
    ، ، خود اپنے آپ سے بھی محبت نہیں رہی . .

    #2
    Be someone that makes YOU happy

    Comment


      #3
      Aw. That's love, heartbreak and life.
      Pyaar waliyan nu nayio vekh sakda zamaana..

      Comment


        #4
        Bauhat khoob, all the stanzas are amazing !

        Comment


          #5
          Originally posted by Pakistani Prince View Post
          وہ سلسلے وہ شوق وہ نسبت نہیں رہی ،
          اب زندگی میں ہجر کی وحشت نہیں رہی ،

          ٹوٹا ہے جب سے اسکی مسیحائی کا طلسم ،
          دل کو کسی مسیحا کی حاجت نہیں رہی

          پھر یوں ہوا کے کوئی شناسا نہیں رہا
          ، پھر یوں ہوا کے درد میں شدت نہیں رہی

          ، پھر یوں ہوا کے ہو گیا مصروف وہ بہت
          ، اور ہم کو یاد کرنے کی فرصت نہیں رہی

          ، اب کیا کسی کو چاہیں کے ہم کو تو ان دنوں
          ، ، خود اپنے آپ سے بھی محبت نہیں رہی . .
          Kiya chahta tha mujhay!
          I am an atheist, but not a communist! I am a vulgarist, but not a radicalist! I am tame, but not idiotic!
          shingle of shingles!

          Comment

          Working...
          X